Home / تذکیری مضامین / بوگن ویلیا

بوگن ویلیا

بوگن ویلیا

رابعہ خرم

میرے گھر میں بوگن ویلیا کی ایک بڑی سی بیل ہوا کرتی تھی جو ڈرائینگ روم کے باہر بنی کیاری میں لگی تھی. بڑھتے بڑھتے اس نے ڈرائنگ روم کی بیرونی دیوار کو ڈھانپ لیا تھا اور اوپر بہت اوپر جا کر پانی کی سیمنٹ سے بنی بڑی ٹینکی بھی اپنے سائے میں لے لی تھی . یہ بوگن ویلیا اگر ہزاروں نہیں تو بھی سینکڑوں پرندوں خصوصا چڑیا کے گھرانوں کا ٹھکانہ تھی. اس کی تہہ در تہہ الجھی شاخوں میں سبز پتوں اور گلابی پھولوں میں کتنے ہی دیکھے اندیکھے گھر آباد تھے. گویا ہمارا ایک گھر سینکڑوں جانداروں کا مسکن تھا . ہم لوگ بیل کے سامنے فرش پر چاول بکھیر دیا کرتے یا روٹی کے ننھے ننھے ٹکڑے کر کے ڈال دیا کرتے اور ایک مٹی کی کنالی (کھلا تھال نما برتن)میں پانی بھر دیتے. روزانہ صبح آذان کی آواز تو مجھے بیدار نہ کرتی کہ مسجد دور تھی اور آواز دھیمی آتی تھی لیکن یہ میرے دوست پرندے میرا نقصان برداشت نہ کرتے اور میرے کمرے کی کھڑکی کے باہر اللہ کی حمد و ثنا اس جوش و خروش سے کرتے کہ ایک پررونق میلہ لگ جایا کرتا .اس میلے کا شور مجھے بیدار کردیتا اور میں بھی اس عبادت میں اپنے طریقے سے شریک ہو جایا کرتی . ایسا سکون آور ماحول ہوتا کہ روم روم شکر میں بھیگ بھیگ جایا کرتا.

 خدا کا کرنا یہ ہوا کہ بیل کے وزن سے اور جڑوں کے زور سے ڈرائینگ روم کی بیرونی دیوار میں کریک پڑنے لگا. اب کیاری میں پانی لگاتے یا بارش ہوتی تو ڈرائنگ روم میں پانی رسنے لگتا. گھر سب کو عزیز ہوتا ہے سو دکھی دل سے سہی لیکن اس بیل کو کٹوانا پڑا. ہماری رونق چلی گئی. ہمارے دوست چلے گئے سحر خیزی اور سکون بھری ساعتیں جو دوستوں کے سنگ تھیں وہ خواب ہوئیں. پھر اسی بیل کی یاد میں گھر کی بیرونی دیوار پر بوگن ویلیا لگائی. یہ بھی بڑھ گئی ہے اس پر سفید پھول آتے ہیں جو پورے چاند کی فسوں خیز روشنی میں کمال کا منظر پیش کرتے ہیں. اس بیل پر اتنے پرندے تو نہیں رہتے کیونکہ یہ اتنی بڑی نہیں اور بیرونی حصے میں ہونے کی وجہ سے اتنی محفوظ بھی نہیں بلیاں اور کوے بھی ادھر پرندوں کے گھونسلوں کو نقصان پہنچاتے ہیں لیکن پھر بھی یہ بہت سے پرندوں کا گھر ہے. اور بیرونی دیوار پر اس نے ایک حفاظتی باڑھ بنا رکھی ہے جو گھر کے لیے پردے کا کام بھی کرتی ہے.

الحمدللہ اللہ ہر کسی کا گھر سلامت رکھے اور ہمیں اپنے گھروں میں اللہ کے ان ننھے مہمانوں کو جگہ دینے کی توفیق عطا فرمائے . رازق رب کریم ہم سب کے دل اور رزق حلال میں کشادگی عطا فرمائے

About رابعہ خرم

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *