Home / خواتین اسپیشل / خصائل  نبوی  صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

خصائل  نبوی  صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

اطاعت امیر اور فیصلہ سازی

  1. رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا جس نے میری اطاعت کی اس نے اللہ کی اطاعت کی اور جس نے میری نافرمانی کی اس نے اللہ کی نافرمانی کی اور جو شخص حاکم شریعت کی اطاعت کرے گا اس نے میری اطاعت کی اور جو حاکم کی خلاف ورزی کر ےگا اس نے میری نافرمانی کی۔ سنو! امام ڈھال کی طرح ہے اس کی آڑ لے کر جنگ کی جاتی ہے اور اسی کی پناہ لی جاتی ہے پس اگر وہ اسے ڈرنے اور عدل وانصاف کرنے کا حکم دے تو اس کو ثواب ملے گا اور وہ اگر اس کی خلاف ورزی کرے تو اس پر گناہ ہوگا۔  (صحیح بخاری:جلد دوم:حدیث نمبر 224)
  2. حضرت ابوہریرہ (رض) سے مروی ہے کہ نبی کریم (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا میرا ہر امتی قیامت کے دن جنت میں داخل ہوجائے گا سوائے انکار کرنے والوں کے ۔صحابہ کرام رضی اللہ عنم نے پوچھا یارسول اللہ! انکار کرنے والے کون ہیں؟ فرمایا جو میری اطاعت کرے گا وہ جنت میں داخل ہوگا اور جو میری نافرمانی کرے گا وہ انکار کرنے والا ہوگا۔ (مسند احمد:جلد چہارم:حدیث نمبر 1552)
  3. حضرت حضرت کعب (رض) روایت کرتے ہیں کہ انہوں نے مسجد میں ابن ابی حدرد سے اس قرض کا تقاضا کیا جو ان پر تھا، (اس تقاضا میں) دونوں کی آوازیں بلند ہوگئیں، کہ اسے رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے بھی اپنے گھر میں سنا، آپ ان کے قریب اپنے حجرہ کا پردہ الٹ کر تشریف لائے اور آواز دی کہ اے کعب! انہوں نے عرض کیا، لبیک یا رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) آپ نے فرمایا کہ تم اپنے اس قرض سے کچھ کم کردو اور اس کی طرف اشارہ کیا، یعنی نصف (کم کردو) کعب نے کہا کہ یا رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) میں نے کم کردیا، آپ نے (ابن ابی حدرد سے) فرمایا کہ اٹھ اور اس (باقی) کو ادا کر دے۔ (صحیح بخاری:جلد اول:حدیث نمبر 448)
  4. عبدالرحمن بن ابوبکرہ سے روایت ہے کہ میں نے رسول کریم (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) سے سنا آپ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) فرماتے تھے نہ حکم کرے کوئی شخص ایک مقدمہ میں دو مقدمات کا اور نہ کوئی حکم دے دو آدمیوں کے درمیان جس وقت وہ غصہ میں ہو (یعنی غصہ کی حالت میں فیصلہ نہ کرے)۔ (سنن نسائی:جلد سوم:حدیث نمبر 1730)
  5. حضرت عمر بن مرہ نے معاویہ سے کہا کہ میں نے نبی کریم (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) سے سنا کہ اگر کوئی حاکم اپنی رعایا کے حاجتمندوں، محتاجوں اور مسکینوں کے لئے اپنے دروازے بند کردیتا ہے تو اللہ تعالیٰ اس کی حاجات، ضروریات اور فقر کو دور کرنے سے پہلے آسمانوں کے دروازے بند کردیتا ہے ۔  (جامع ترمذی:جلد اول:حدیث نمبر 1356)

 

خاور رشید

About خاور رشید

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *