Home / رمضان سپیشل / رمضان المبارک ماہ تربیت ہے…

رمضان المبارک ماہ تربیت ہے…

اللہ تعالی اپنے بندے پر ہمیشہ سے کرم فرمانے والا ہے اس کی محبت و عنایات قدم قدم پر شامل حال رہتی ہیں وہ کبھی بھی اپنے بندے پر اس کی طاقت سے زیادہ بوجھ نہیں ڈالتا بلکہ ہمیشہ آسانی والا معاملہ فرماتا ہے۔

جو احکام بظاہر انسانی طبیعت پر بوجھ نظر آتے ہیں وہ بھی اصل میں اس کی تربیت کے لیے متعین کیے گئے ہیں اور اس کو اس معیار پر پہنچانے کے لیے مقرر کیے گئے ہیں جو جنت کے لیے مطلوب ہے۔

آپ روزہ کی مثال لے لیجیے بظاہر یہ ایک مشکل عبادت ہے خاص کر موسم گرما میں اس کی ادائیگی مشکل نظر آتی ہے۔

لیکن انسان اس کی حقیقت پر غور کرے تو پتہ چلتا ہے کہ یہ اصل میں ماہ تربیت ہے اللہ تعالی پورے ماہ انسان کو دن بھر حلال چیزوں سے  دور رکھ کر اپنی اطاعت و فرماں برداری کی عادت اس کے اندر پیدا کرتا ہے جس کا فائدہ یہ ہوتا ہے کہ انسان پھر پورا سال اپنے دامن کو گناہوں سے آلودہ ہونے سے بچاتا ہے۔اس لیے ہمیں روزہ کو اپنے اوپر بوجھ نہیں سمجھنا چاہیے بلکہ رب کا تربیتی پروگرام سمجھنا چاہیے جسے ھماری دنیا اور آخرت کی بھلائی کے لیے تشکیل دیا گیا ہے۔اس سے  روزہ رکھنا آسان ہو جاتا ہے۔اور اس کے ساتھ ساتھ اگر مندرجہ ذیل احساسات بھی انسان اپنے اندر پیدا کر لے تو روزہ تکلیف کی بجائے لطف کا باعث بن جاتا ہے۔

1-انسان یہ سوچے کہ میں نے اس اللہ تعالی کو راضی کرنے کے لیے روزہ رکھا ہے جو مسلسل مجھ پر نظر رکھے ہوئے ہے اور وہ  یہ جانتا ہے کہ میں یہ بھوک اور پیاس صرف اسی کے لیے برداشت کررہا ہوں اس لیے وہ مجھ سے خوش ہو رہا ہے۔

میرے خیال میں کسی بندے کے لیے یہ احساس بہت بڑے حوصلے کا باعث ہے  کہ اس کا رب اس سے راضی ہے۔

2-میں نے یہ روزہ اس کی توفیق سے رکھا ہے اور یہ ایسی دولت ہے جو کم لوگوں کو نصیب ھوتی ہے اور اس نے مجھے اس لیے عطا کی  ہے کہ وہ مجھے دنیوی اور اخروی امتحان میں کامیاب کروانا چاہتا ہے۔

اس احساس سے مشکل سے مشکل عبادت آسان ھو جاتی ہے کیوں کہ اس مالک کا بندہ کیوں نہ خوشی سے کہا مانے گا جس کے بارے میں اسے یقین ہے کہ اس نے حکم اپنے بھلے یا فائدے کے لیے نہیں بلکہ میرے فائدے کے لیے دیا ہے۔

اس لیے مکرر عرض ہے کہ جو احکام خداوندی بظاہر بوجھ بھی نظر آتے ہیں حقیقت میں وہ ہماری تربیت کے لیے ہیں اور ہمیں اس معیار پر پہنچانے کے لیے ہیں جو جنت کے لیے مطلوب ہے۔اس لیے شیطان کی چال میں آنے کی بجائے رحمن کی جانب خوشی سے دوڈ لگا دیجیے۔اللہ ضرور نوازے گا۔

About عثمان حیدر

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *