Home / رمضان سپیشل / رمضان المبارک میں قرآن کریم کی تلاوت

رمضان المبارک میں قرآن کریم کی تلاوت

رمضان المبارک اور قرآن کریم کا آپس میں گہرا تعلق ہے۔اس عظیم کتاب ہدایت کا آغازاسی ماہ ایک مبارک رات کو ہوا۔جسے لیلتہ القدر اور لیلتہ المبارکہ کہتے ہیں۔

قرآن کریم کی عظیم نعمت  اور قیمتی خزانے کی وجہ سے رمضان کا مہینہ مبارک ہوا اور مخصوص عبادات یعنی روزوں اور قیام الیل کے لیے منتخب  ہوا۔اس مہینے کا اصل حاصل قرآن مجید کی تلاوت و سماعت اور علم و فہم کے حصول کا اہتمام ہےاس مہینے میں جبرائیل علیہ ا سلام خود آ کر نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کو قرآن مجید کا ایک دورہ مکمل کروایاکرتے تھے۔﴿بخاری و مسلم بحوالہ ابن عباس﴾

اس لیے رمضان  میں قرآن کے ترجمہ و تفسیر کا اہتمام کرنا چاہیے اور نماز تراویح میں پابندی کر کے ایک بار پورا قرآن سننے کی سعادت حاصل کرنی چاہیے۔اس کے ساتھ ساتھ روزانہ نمازوں کے اوقات میں تلاوت کا معمول بنانا چاہیے۔

عام طور پر قرآن مجید میں تقریبا چھ سو صفحات ہوتے ہیں۔اگر ہم ان صفحات کو تیس دن یعنی ایک ماہ پر تقسیم کریں تو روزانہ کی بنیاد پر بیس صفحے بنتے ہیں۔یہ ذرا مشکل معلوم ہوتا ہے لیکن اگر ہم ان بیس صفحات کو پنج وقتہ نمازوں پر تقسیم کریں تو ہر نماز کے بعد چار صفحے تلاوت کر کے ہم قرآن کریم کا ایک ختم مکمل کر سکتے ہیں۔اگر آپ رمضان المبارک میں دو بار قرآن مکمل پڑھنے کی سعادت حاصل کرنا چاہتے ہیں تو ہر نماز کے پہلے اور بعد چار چار صفحات کی تلاوت کر کے باآسانی یہ ہدف  حاصل کر سکتے ہیں۔

یہ ٹائم ٹیبل عام اور کمزور افراد کے لیے ہے ورنہ قرآن مجید سے شغف رکھنے والے  لوگ روزانہ دس پندرہ پاروں کی تلاوت آرام سے کر سکتے ہیں۔ہمارا ایک دوست رمضان کے اخری عشرے میں روزانہ ایک قرآن پاک ختم کرتا ہے کیونکہ رمضان قرآن کی سالگرہ کا موقع ہے۔

About شاہ فیصل ناصر

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *