Home / تعمیر فکر و تعمیر شخصیت / سب سے بڑی کامیابی اور ناکامی

سب سے بڑی کامیابی اور ناکامی

حالیہ کرکٹ میچ  میں پاکستان کی جیت کے تناظر میں لکھی گئی  تحریر۔

ماشاءاللہ آج پاکستان چمپیئنز ٹرافی کا فائنل جیت گیا. آپ سب کو بہت بہت مبارک ہو۔آج آپ سب بہت خوش ہیں اور خوشیاں منا رہے ہیں.۔ اللہ سے دعا ہے کہ وہ آپ سب کو اس سے بھی ہزاروں گنا بڑھ کر خوشیاں و کامیابیاں عطا فرمائے اور ہمیشہ اسی طرح ہنستا مسکراتا رکھے۔

دوسری طرف ہندوستان میں ان کی ٹیم کی کھیل میں میدان میں ایک معمولی سی ہار پر صف ماتم بچھی ہوئی ہے۔ اکثر ہندوستانی بھائی انتہائی غمزدہ اور افسردہ ہیں۔

میں سوچتا ہوں کہ دنیا کی ایک معمولی سی عارضی کامیابی پر اتنی خوشی اور لذت ملتی ہے تو اس سے کھربوں کھربوں گنا سے بھی زیادہ بڑی اور حقیقی کامیابی ملنے والوں کو کس درجہ کی خوشی اور لذت ملے گی۔ وہ کامیابی اسے ملے گی جو دنیا میں اللہ کا ہو کر جیے گا۔اور اس کے بدلے جسے آخرت میں اللہ کا پڑوس مل جائے گا۔ جو جنت پا لے گا۔جہنم سے بچ جائے گا۔جسے اللہ آخرت میں تمام انسانیت کے سامنے کہہ دے گا کہ “یہ بندہ تو میرا ہے۔”

دوسری طرف دنیا کی ایک معمولی ہار پر اتنا غم اور افسوس ہے تو آخرت کی ہمیشہ کی اور اس سے کھربوں کھربوں درجے زیادہ بڑی ہار کا کتنا افسوس اور غم ہو گا۔وہ ہار کہ جس کے غم میں انسان اپنے ہاتھ کاٹ کھائے گا۔یہ ہار اس کو ملے گی جو دنیا میں اللہ کو راضی نہ کر سکا۔ جو اللہ کو ہمیشہ ہمیشہ کے لیے کھو دے گا۔جو جہنم کی آگ میں جائے گا۔

اللہ سے دعا ہے کہ ہم سب کو دنیا کے ہر میدان میں بھی اور خصوصاً آخرت کے میدان میں کامیابیاں اور خوشیاں عطا فرمائے۔ اور اللہ ہمیں دنیا و آخرت کی ہر ناکامی اور ذلت سے بچا لے۔

About طاہر محمود

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *