Home / شمارہ ستمبر 2017 / کائنات-3

کائنات-3

وسعت کے بعد آج ذکر کرتے ہیں کائنات  کی پیدائش کا۔  اس ضمن میں سب سے زیادہ جس خیال کو تسلیم کیا جاتا ہے اور جس کی حالیہ تجربات نے بھی تصدیق کی ہے،  وہ ہے حادثہ عظیم  یا  بگ بینگ کا تصور۔   اس تصور کی سچائی کے شواہد تواتر سے ملے ہیں اس لیے اسے ایک درجہ کی حقیقت ہی تسلیم کیا جاتا ہے لیکن کیوں کہ سائنس ایک مسلسل سیکھنے کا ، تحقیق اور جستجو کا نام ہے اس لیے کبھی بھی کوئی بات سو فیصد نہیں کہی جاسکتی۔

حادثہ عظیم یا بگ بینگ

بگ بینگ آخر ہے کیا؟  اس تمام کائنات کا جس کا ابھی ہم نے ذکر کیا،  جو ہو گزر چکا،  جو موجود ہے اور جو ابھی آئے گا سب کا خام مال ایک انتہائی کثافت کے ساتھ ،  ذرہ سے بھی حقیرمقام پر موجود تھا،  اس ذرہ کا کسی اثر کے تحت پھٹ جانا، اس عمل کے نتیجے میں میں تابکاری،  مادہ،  توانائی وغیرہ کا اخراج،  ابتدائی بدلتی کیفیتوں کا مختلف عوامل سے گزر کر آخر اس صورت میں منقسم ہونا۔ اس کو آسانی کے لیے سمجھ لیجیے کہ شروع میں الیکٹرون، پروٹان وغیرہ کا ظہور ہو نا جن سے ایٹم مل کر بنا، ایٹم سے ستارے،  ستاروں سے کہکشاں، کہکشاوں سے کلسٹر(جھرمٹ)، کلسٹر سے سپر کلسٹر اور ان سے طویل خلائی دھاگے یا سپیس ویب۔

سنگولیریٹی 

سنگولیریٹی ، اکائی ہے جس سے سب کائنات وجود میں آئی۔ آسان الفاظ میں سمجھ لیں کہ  سب ایک تھا ، پھر کسی اثر کے تحت اس ایک اکائی کو پھاڑ دیا گیا۔ یہ پھٹنا ہی بگ بینگ کہلاتا ہے کیوں کہ اس ایک اکائی کا پھٹنا شدت سے تھا، ایک زور دار آواز کے ساتھ اور اس پھٹنے کے ساتھ ہی توانائی ، مادہ جس سے آگے چل کر کائنات کا خام مال مہیا کرنا تھا باہر نکل آیا۔

آپ کو اب بھی سمجھنے میں مشکل پیش آرہی ہو تو اس کی مثال اس طرح سمجھیئے کہ کسی ایک فوم یا  سپرنگ کا ٹکڑا لے کر اس کو دباتے چلے جائیں، آپ کیا کر رہے ہیں؟ آپ اس میں حرارت،  توانائی منتقل کر رہے ہیں اور ساتھ ساتھ فوم یا سپرنگ کے ایٹم کے درمیان سپیس یا جگہ کم کر رہے ہیں۔ جب آپ اس کو چھوڑیں گے تو ایک دم سپرنگ یا فوم اچھلے گا اور اپنی جگہ پر واپس آجائے گا۔ سپرنگ کا اچھلنا آپ کو زیادہ محسوس ہوگا فوم کی نسبت۔ لیکن اس مشاہدے سے آپ بگ بینگ کا تصور امید کرتا ہوں سمجھ گئے ہوں گے۔ اس ہی طرح تمام مادہ اکٹھا کر دیا جائے ، ان کے درمیان سپیس کو ختم کر دیا جائے اور ایک معمولی سے نقطے میں یہ لامنتاہی کائنات سمیٹ دی جائے تو سوچیئے کتنی توانائی، حرارت سے لبریز ہو گا وہ ایک نقطہ، وہ ایک اکائی جس قدر بھری بیٹھی ہوگی ابلنے کو، بے چین ہوگی امڈنے کو۔

امید کرتا ہوں بگ بینگ کا ابتدائی تصور ذہنوں میں بن گیا ہو گا۔ اگلی بار بگ بینگ کے ابتدائی چند لمحات کا ذکر کرنے کی کوشش کروں گا۔ اللہ تعالیٰ سے مزید علم و عمل کی درخواست ہے۔ آمین۔

About ڈاکٹر فہد چوہدری

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *